حمد باری تعالیٰ

اشتہارات

یوٹیوب چینل

تلاش کریں

احمدی قیادت سے صرف ایک سوال : صفدر چیمہ

نوٹ: میری یہ تحریر خالصتاً دعوتی اسلوب میں ہے اور دنیا کے ہر کونے میں موجود احمدی جماعت کی سیاسی و فکری رہنمائی کرنے والی قیادت سے سوال ہے اور عام احمدی حضرات کے لیے دعوت فکر…….!!

” بقول آپ کے اُمتی نبی(ظِلی/بروزی) ہماری اصلاح کے لیے آتے رہیں گے اور آپ اپنے اس دعوے کو ثابت کرنے کے لیے قرآن میں سے اللہ کی طرف سے تمام انبیاء کرام سے کیے گئے میثاق کو دلیل کے طور پر پیش کرتے ہیں کہ ” آپ آنے والے ہر نبی کی حمایت و نصرت کریں گے ” آپ کی یہ دلیل بالکل درست ہے،اس دلیل سے جو نتیجہ آپ اپنے مرزا غلام احمد صاحب کے لیے نکالتے ہیں اس بحث کو فی الحال ایک طرف رکھتے ہوئے اور اس نکتے کو بھی کہ خاتم النبیین جیسی منفرد اصطلاح محمد کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے پہلے کسی بھی نبی اور رسول نے استعمال نہیں کی ہم آپ کی ہی بات کو لے کر آگے بڑھتے ہیں، ہم دیکھتے ہیں کہ اس دلیل کی روشنی میں ہر نبی و رسول نے اپنے بعد آنے والے کی خبر دی ہے تو یقیناً اللہ کا یہ قانون آج بھی ویسے ہی کام کر رہا ہوگا جیسے گذرے ہوئے انبیاء کے دور میں کیونکہ اللہ اپنے سنت کے خلاف نہیں کرتاـ

میرا سوال ” کیا مرزا غلام احمد صاحب نے اپنے بعد آنے والے کسی امتی نبی کے بارے کوئی خبر،اس کی علامات اور اس کے آنے کا وقت بیان کیا ہے یا امتی نبی(ظلی/بروزی) والی اصطلاحی کھڑکی صرف اپنی ذات کے لیے کھولی اور پھر پکا پکا تالا لگا کر چابیاں بحیرہ مردار میں پھینک دیں؟

احمدی جماعت کے تمام پیروکاروں سے میری گزارش ہے کہ وہ بھی اپنی قیادت سے یہ سوال ضرور پوچھیں…

فیس بک تبصرے