حمد باری تعالیٰ

اشتہارات

یوٹیوب چینل

تلاش کریں

خوفناک کلچر -سید منتظر حسین

بے حسی کے واقعات اتنی شدت پکڑ گئے کہ اب تمام تعلیمی ادارے اساتذہ والدین سب ناکام نظر آتے ہیں جتنے ذیادہ تعلیم کیلئے وسائل ہیں اتنا ہی ظلم اور ذیاتی کے واقحات بھی ذیادہ بڑھتے نظر آتے ہیں ہر شخص خود کو حق پر اور دوسرے کو غلط ثابت کرنے میں لگا ہوا ہے افسوس کوئ ساسیت میں اک دوسرے کا دشمن بنا ہے تو کوئی مذہب کے نام پر فساد برپا کر رہا
ماں کی گود خاندان کی نصیحت باب کی تربیت سکول مسجد سب بے بس دکھائی دیتے ہیں

اختلاف پر دوست دوست کو قتل کر دیتا ہے تو کہیں محافظ آپنے آفسر کی جان لے لیتا ہے کدھر شاگرد استاد کو مارتا نظر آتا ہے تو کہںں کوئی عالم دین پر قاتلانہ حملے جو اپنے عالم کی جان لے لیتے ہیں یہ حادثہ نہیں ہوتا بلکہ جو تفرقہ کا بھیانک کھیل جاری ہے اس کا نتیجہ ہے

افسوس کہ اب پڑھے لکھئے لوگ بھی اقتدار کی خاطر لوگوں کو دو حصوں میں تقسیم کر ریے ہیں حق و باطل کی جنگ کا ماحول بنا رہے ھیں جہاں لوگوں کو مذہب مسلک سیاست پے لڑوایا جاتا ہے اس کے نیتجے یہی نکلیں گے اسے لوگ امن پے یقین نہیں رکھتے ایکشن پلان پیغام پاکستان اک سو اسی علمائے کی مہر ثابت ہے

ہم عبادت گزار کافر فحش ممالک سے ہی کچھ سیکھ لیں, نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے غیر سازی کا راوج توڑا جس نے تمام حکمرانوں کو جھنجوڑ کے رکھ دیا مگر ہم بھائی دوستوں والدین اساتذہ کی جان لینے کہ درپے ہیں جہالت کی حد تعلیمی اداروں آداب فرزندی بھائی نہیں بلکہ ہابیل کابیل کے آثار نظر آتے ہیں
یہ مجرمانہ رویے ہر انسان کیلئے لمحہ فکریہ ہیں

فیس بک تبصرے