حمد باری تعالیٰ

اشتہارات

یوٹیوب چینل

آج کا افسانچہ- شبر عباس

نہ آپ کو کبھی تنہا دیکھا،نہ سمجھا،نہ پایا
آپ وہ خوب صورت انجمن ھیں جس میں ھمہ وقت دوستی،محبت،اپنائیت اور احساس کے چراغ جلتے رہتے ھیں جن کی لو کبھی مدھم نہیں ھوتی.
آپ محبت کے مندر میں پڑی وہ دلفریب مورتی ھیں کہ جس کے نفیس مرمریں بدن سے عطر بیز ھوائیں پھوٹتی رھتی ھیں اور جسے دیکھتے ھی قلب و روح بیک وقت
پرستش کرنے لگتے ھیں.
آپ موتیے کے پھولوں پر پڑی ھوئی وہ شبنم ھیں کہ جسے صبح کا ستارہ اپنے غرفوں سے جھانکتا رہتا ھے جو نہ شعاع مہر سے فنا ھوتا ھے نہ دمک ماند پڑتی ھے بلکہ مروارید رشک کرتے کرتے حسد کرنے لگتے ھیں.
آپ زمین پر چمکنے والا
وہ ستارہ ھیں کہ جس کے حسن بےمثال و بے حدوکنار پر فلک کے تمام ستارے ٹوٹ ٹوٹ کر گرنا شروع ھو جاتے ھیں.
آپکی چال کے ھر نقش پر پوری کائنات اپنا قدم رکھتی ھے، اور ٹھرنے پر وقت کی نبضوں کا دم گھٹنے لگتا ھے.
آپ کی مسکراہٹ کے قدموں پر زمانے بھر کے غم ماتھا ٹیک کر قہقہوں سے اپنی آغوش بھرتے ھیں.
آپ وفا کی وہ لکشمی ھیں کہ جس کی قیمت محبت کے نام پر بنے ھزاروں تاج محل بھی چکانے سے اپاہج ھیں.
اور آپ کے پاوں کو سنگ ریزے چھو لیں تو آبگینے بن جاتے ھیں.
میں آج دوپہر ایک بجے مونا لیزا کی تصویر کے سامنے کھڑا اپنے محبوب کے بارے میں سوچ رھا تھا. یہ سب سن کر مونا لیزا بھی سن ھو گئی تھی.

فیس بک تبصرے